Home » گلین بیک نامی ایک امریکی دانشور کیسے اسلام اور پاکستان دشمنی سے اسلام اور پاکستان کا خیر خواہ بن گیا
خبریں

گلین بیک نامی ایک امریکی دانشور کیسے اسلام اور پاکستان دشمنی سے اسلام اور پاکستان کا خیر خواہ بن گیا

گلین بیک ایک امریکی دانشور ہے، جس نے بے شمار کتابیں لکھی ہیں، ہزاروں کالمز لکھے، ریڈیو اور ٹی وی پر ان گنت شوز کیے، اور وہ پورے امریکہ میں ایک اہم سیاسی مدبر اور مبصر کے طور جانا جاتا ہے15 اگست کے بعد گلین بیک اور اس کے خیراتی ادارے مرکری ون کا سارا عملہ اپنے جہازوں سمی ہمسایہ ملک (ریفیوجستان) میں پھنس گیا تھا۔ سٹوڈنٹس نے ان کے سارے عملے، جہازوں اور دیگر ساز و سمان کو تحویل میں لے لیا تھا۔ اس پر گھبرا کر گلین بیک نے امریکہ کے ہائی لیول قیادت سے مدد مانگی لیکن کوئی شنوائی نہ ہو سکی، گلین بیک نے امریکی کانگریس کی مدد سے پاکستان میں موجود ان کے حواری سیاستدانوں اور این جی اوز سے مدد مانگی لیکن وہ بھی کچھ حاصل نہ ہو سکا۔ گلین بیک نے بھارت سے مدد مانگی کہ ان کے عملے اور ساز و سامان کو ریفیوجستان سے نکلنے میں مدد کرو تو بھارتی سرکار نے بھی ہاتھ کھڑے کر دیے

اب پاکستان، اسلام اور عمران خان کے سب سے بڑا دشمن گلین بیک کے پاس آخری راستہ یہ بچا تھا کہ وہ عمران کان سے مدد مانگے، جیسے ہی گلین بیک نے وزیراعظم عمران خان سے رابطہ کیا تو دیکھتے ہی دیکھتے پوری انتظامیہ حرکت میں آ گئی اور عمران خان کے حکم پر پاکستان کی ہائی کمانڈ ملٹری نے پوری طالبان سے سفارتی سطح پر رابطہ قائم کیا اور گلین بیک کے عملے، جہازوں، دیگر ساز و سامان اور ان تمام لوگوں جو کہ گلین بیک کے ساتھ ریفوجستان سے نکلنا چاہتے تھے، ان سب کو ہمسایہ ملک سے نکالا اور دو دن میں بحفاظت امریکہ پہنچا دیا

یہ ساری تفصیلات آج گلین بیک نے اپنے ٹوئیٹر سے شئیر کی ہیں اور اس نے عمران خان اور پاکستانی قوم کا بہت بہت شکریہ ادا کیا ہےیہاں پر یہ بات دلچسپی سے خالی نہیں ہو گی کہ گلین بیک کل تک اسلام اور پاکستان کا بہت بڑا دشمن تھا، وہ امریکی میڈیا کا بہت بڑا آدمی ہے اور اس نے اسلام اور پاکستان کے خلاف بہت گھناؤنی کیمپین کی ہے۔ وہ اسلام اور پاکستان کو نیچا دکھانے کا کوئی موقع ہاتھ سے نہیں جانے دیتا

لیکن جب عمران خان نے اس کی اُس وقت مدد کی جب ساری دنیا ا س کی مدد نہیں کر پائی تو وہ عمران خان کے احسان تلے دب گیا اور اس کے نظریات تبدیل ہو گئے اور آج وہ اسلام کے دشمن کے طور پ پہچانے جانے والا شخص ۔۔ اسلام کا محافظ بن چکا ہے اور اب وہ ہر جگہ اسلام اور پاکستان کی وکالت کرتا نظر آ رہا ہے
دوستو ۔۔۔ یہ ہے ایک مردِ قلندر کی نظر کا کرشمہ جس کے متعلق اقبال نے کہا تھا کہ “نگاہِ مردِ مومن سے بدل جاتی ہیں تقدیریں” ۔۔ عمران خان نے ایسے اسلام دشمن کو اپنے اخلاق اور مدد سے آج اسلام کا محافظ بنا دیا ہے۔ شکر بجاؤ لاؤ کہ اللہ نے پاکستان کو ایسا وزیراعظم دیا ہے جو ولی اللہ ہےکیا یہ اسلام اور پاکستان کی کم خدمت ہے جو عمران خان نے کی ہے ۔۔۔ خدارا سوچیے ۔۔۔۔!!
تحریر: عاشور ویوز

Add Comment

Click here to post a comment